Aakhri baar milo to tumhe yaad rahe
Apni pehli mulaaqat ka andaaz rahe.

Kasmasayi hui nazro’n se badhe aana
Halki muskaan se chehre ko dhake aana,
Pass aa kar woh gulaabo’n se tere honto’n ka
Lub pe halka sa tere lams ka chhu jaana;

Aakhri baar milo to tumhe yaad rahe
Apni pehli mulaaqat ka andaaz rahe.

Thi ajab baat ki hum bol nahi paaye the
Tum bhi shayad ki zara dair to sharmaaye the,
Phir jo haatho’n par tere haath dhara tha humne
Tum na kuch bole bus baanho’n mein simat aaye the;

Aakhri baar milo to tumhe yaad rahe
Apni pehli mulaaqat ka andaaz rahe.

Halki halki woh teri khushbu ne halkaan kiya
Jism mein daud gayi bijli woh kaam kiya,
Tum mere honto’n ke phir itna qareeb aate gaye
Ki saans se saans mili aur na kuch yaad raha.

Aakhri baar milo to tumhe yaad rahe
Apni pehli mulaaqat ka andaaz rahe.

آخری بار ملو تو تمہے یاد رہے
اپنی پہلی ملاقات کا انداذ رہے۔

کسمسائ ہوی نظروں سے بڑھے آنا
ہلکی مسکان سے چہرے کو ڈھکے آنا
پاس آ کر وہ گلابوں سے تیرے ہونٹوں کا
لب پی ہلکا سا تیرے لمس کا چھو جانا۔

آخری بار ملو تو تمہے یاد رہے
اپنی پہلی ملاقات کا انداذ رہے۔

تھی اجب بات کی ہم بول نہیں پاے تھے
تم بھی شاید کۂ ذرا دیر تو شرماے تھے۔
پھر جو ہاتھوں پر تیرے ہاتھ دھرا تھا ہمنیں
تم نا کچھ بولے بس باذو میں سمٹ آے تھے۔

آخری بار ملو تو تمہے یاد رہے
اپنی پہلی ملاقات کا انداذ رہے۔

ہلکی ہلکی وہ تیری خوشبو نے ہلکان کیا
جسم میں دوڈ گیی بجلی وہ کام کیا۔تم میرے ہنٹوں کے پھر اتنا قریب آتے گیے
کہ سانس سے سانس ملی اور نہ کچھ یاد رہا۔

آخری بار ملو تو تمہے یاد رہے
اپنی پہلی ملاقات کا انداذ رہے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s